مائل بکرم راتیں ۔ اعجاز عبید ۔۔۔ ابتدائیہ

6 views
Skip to first unread message

aijaz...@gmail.com

unread,
Aug 31, 2005, 3:03:46 PM8/31/05
to Sher-o-Adab
مایل بکرم ہیںراتیں
آنکھوں سے کہو کچھ مانگیں
خوابوںکےسواجوچاہیں

شہریار

قرۃ العین حیدر کی نذر


’’پی چو۔ ہمارے سارے آیڈیلس!‘‘ رخشندہ
نے آہستہ سے کہا۔ پھر اسے ہی محسوس ہوا
کہ اس نے کتنی بیکار بے معنی لغو بات کہی
ہے۔‘‘
(میرے بھی صنم خانے۔ ص۔ ۲۰۲)

Reply all
Reply to author
Forward
0 new messages